پاکستا ن : کوکاکولا کے چھہ پلانٹس پر اجتماعی معاہدے

گذشتہ دنوں کوکاکولا انتظامیہ اور یونینز کے درمیان چارٹر آف ڈیمانڈز پر مذاکرات مکمل ھونے کے بعد پانچ یونینوں نے معاہدوں پر دستخط کر دیئے ۔ یہ پہلا موقع تھا کہ کوکاکولا پاکستا ن اور اس کی چھہ پلانٹ لیول یونینز نے اپنے مطالبات پر مشترکہ مذاکرات کیے ، اس سے قبل صرف دو پلانٹس کراچی اور رحیم یار خان میں یونینز تھیں جہا ں اجتماعی معاہدات تشکیل پاتے تھے۔ آئی یو ایف سے ملحقہ نیشنل فیڈریشن آف فوڈ ، بیوریجز اینڈ ٹوبیکو ورکرز نے گذشتہ سالوں میں چار پلانٹس (ملتان ، لاھور ، گجرانوالہ اور فیصل آباد) کے محنت کشوں کو منظم کیااور ان کی یونینز تشکیل دیں ۔
ملتان میں کمپنی انتظامیہ اور رجسٹرار کی ملی بھگت سے ایک طویل عرصے تک یونین رجسٹر نہ ہو سکی جبکہ پاکٹ یونین کو رجسٹریشن دے دی گئی ۔ ایک طویل جدوجہد کے بعد بلاآخر ملتان میں ایمپلائز یونین کو رجسٹریشن مل گئی ھے مگر پاکٹ یونین کے ساتھہ اس کے ریفرنڈم کا مرحلہ باقی ھے۔
گجرانوالہ میں یونین نے گذشتہ سال جولائی میں چارٹر آف ڈیمانڈ دیا تھا جبکہ فیصل آباد میں یونین نے اکتوبر اور لاھور میں امسال جنوری میں چارٹر آف ڈیمانڈ دیے گئے ۔ کراچی اور رحیم یار خان میں بھی اس سال جنوری میں چارٹر آف ڈیمانڈ دیئے گئے تھے ۔ کوکاکولا کی تمام یونینز نے امسال یہ طے کیا کہ وہ انتظامیہ سے مشترکہ بات چیت کریں گی۔ کچھہ عرصہ کے تعطل کے بعد انتظامیہ نے بھی اس بات پر رضامندی کا اظہار کردیا لہذا مشترکہ بات چیت میں تمام یونینز نے حصہ لیا اور بلاآخرکراچی ،رحیم یار خان، لاھور ، گجرانوالہ اور فیصل آباد میں یونینز نے اجتماعی معاہدوں پر دستخط کر دیئے جبکہ انتظامیہ نے اس بات پر رضامندی ظاہر کی کہ جو مراعات ان پانچ پلانٹوں کے مزدوروں کو ملیں گی اس کا اطلاق ملتان پلانٹ پر بھی ھو گا جہاں فی ا لحال کوئی سی بی اے یونین نہیں ھے ۔
ملتان ، لاھور ، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے ورکرز کے لئے یہ پہلا معاہدہ تھا کیونکہ ان پلانٹس پر آج تک یا تو کوئی یونین نہیں بن سکی یا پھر انتظامیہ نے ماضی میں بننے والی یونینز کو کچل دیا۔ لاھور ، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے محنت کشوں کے لئے یہ ایک تاریخی موقع تھا جب وہاں یونینز نے اپنا پہلا ایگریمنٹ کیا ھے جبکہ انھوں نے کراچی میں کوکاکولا محنت کشوں اور کراچی یونین کا بھر پور شکریہ ادا کیا اور انھیں خراجِ تحسین پیش کیا کہ کراچی یونین نے ان کی ہر قدم پر راہ نمائی کی اور آئی یو ایف پاکستان آفس نے بھی ان تمام یونینز کی ہر قدم پر راہنمائی کی۔ کوکاکولا کراچی ،رحیم یار خان، لاھور ، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے محنت کشوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ اپنے اتحاد کو مذید مضبوط اور فعل بنائیں گے تاکہ مستقبل میں اپنے لئے زیادہ بہتر مراعات حاصل کر سکیں ۔

Choose your language: